سبق ۱  : رسک کمیو نیکیشن کے بنیادی تصورات

موضوع .۳ : رسک کمیو نیکیشن کیوں ؟

حقیقی یا ممکنہ خطرات سے متعلق معلومات اور آراء کی موثر کمیونیکیشن رسک کے تجزیہ کا ایک لازمی جز ہے۔ رسک کی موثر کمیونیکیشن میں اچھے رابطے کے عام فہم اصولوں کو مدّنظر رکھنا چاہئے، اور رسک کمیو نیکیشن کے مقصد کا احساس ہونا چاہئے۔

مقاصد:

  • موثر بمقابلہ غیر موثر کمیونیکیشن کی تمام خصوصیات کی وضاحت اور بات چیت کرنا
  • وضاحت کرنا کہ رسک کمیو نیکیشن کیوں ضروری ہے
  • وضاحت کرنا کہ رسک کمیو نیکیشن کی ضرورت کب ہوتی ہے۔

اچھی اور بری کمیونیکیشن کی خصوصیات

اچھی بمقابلہ بری کمیونیکیشن پر بہت کچھ لکھا جا چکا ہے۔ جبکہ عام فہم اصولوں کے اطلاق کے ذریعے اچھی کمیونیکیشن کے اصولوں کو سیکھا جا سکتا ہے اور موثر پیغامات تیار اور مہیا کیے جا سکتے ہیں ۔ اصولوں کی اچھی کمیونیکیشن کی فہرست مندرجہ ذیل ہے۔ یہ فہرست اہمیت کے لحاظ سے کسی خاص ترتیب میں نہیں ہے۔

مزید جاننے کے لئے کے اصولوں میں سے ہر ایک پر اپنا ماؤس   گھمائیں ۔

پودوں کی صحت کے بارے میں کمیونیکیشن بین الاقوامی ، قومی یا مقامی سطح کے سرکاری ذرائع سے حاصل ہوتی ہے یہ دوسرے ذرائع سے بھی حاصل ہو سکتی ہے، مثلا صنعت، تجارت، صارفین اور دیگر دلچسپی رکھنے والی جماعتوں سے۔ حقیقی یا ممکنہ خطرات کے بارے میں معلومات کی موثر کمیونیکیشن رسک کے تجزیے کے عمل کا ایک اہم حصہ ہے۔

اس کے بر عکس، بری کمیونیکیشن:

  • اس بات کا خیال نہیں رکھتی کہ سامعین کون ہیں
  • ایسی زبان استعمال کرتی ہے جو جارحانہ اور غیر مہذب ہو
  • ایسے مخففات،زبان اور مذاق کا استعمال کرتی ہے جو صرف چند لوگ سمجھتے ہوں۔
  • غیر واضح اور غیر منظم ہوتی ہے
  • رائے لینے کا نا مناسب طریقہ کار استعمال کرتی ہے۔
  • نا مکمل ہوتی ہے
  • ایسی زبان استعمال کرتی ہے جو واضح نہ ہو
  • اپنے ہی ادارے پر توجہ مرکوز کرتی ہے
  • شائستہ نہیں ہوتی
  • دردمندی سے پیش نہیں کی جاتی
  • سامعین کے جوابات کی طرف دھیان نہیں دیتی
  • دیر سے، اور غیرمتواتر طریقہ سے ہوتی ہے
رسک کمیو نیکیشن کیوں ضروری ہے؟سب سے بنیادی سطح پر رسک کمیو نیکیشن رسک کے تجزیہ نگاروں ( رسک کے جائزہ کاروں اور رسک کے منتظمین) کیلئے اہم ہے۔ ان کے پاس ایک باہمی سمجھ بوجھ ہونی چاہئے تاکہ وہ معلومات کو بہترین ممکنہ طریقے سے استعمال کر سکیں اور مناسب انتظامی فیصلوں تک پہنچ سکیں ۔ رسک کمیو نیکیشن، لازمی طور پر رسک اسیسمنٹ ، رسک کی روک تھام اور عوام کے درمیان ایک اہم رابطہ مہیا کرتی ہے۔ رسک کمیو نیکیشن خطرات کے مختلف تصورات کے درمیان ہم آہنگی پیدا کرتی ہے اور سٹیک ہولڈرز کے نقطہ نظر کی حوصلہ افزائی کرتی ہے۔

رسک کمیو نیکیشن کی کب ضرورت پڑتی ہے؟

موضوع کے ماہرین نے رسک کمیو نیکیشن کے پانچ مقاصد کی نشان دہی کی ہے: رابطہ کار پر بھروسا قائم کروانا، (کسی ممکنہ خطرے کے بارے میں) شعور پیدا کرنا، تعلیم دینا، کسی معاہدے پر یا کم از کم کسی اتفاقِ رائے پر پہنچنا اور اس سلسلے میں عمل کی حوصلہ افزائی کرنا۔ کیونکہ مقاصد مختلف ہو سکتے ہیں اس لئے رسک کمیو نیکیشن کی حکمت عملی مختلف اغراض کے حساب سے مختلف ہو سکتی ہے۔ مثال کے طور، پر چھوٹے چھوٹے براہ راست پیغامات شعور بیدار کرنے کیلئے بہترین ہوسکتے ہیں، لیکن رسک کی شدت اور اس کے خلاف کیے جانے والے اقدامات کا انتخاب کے بارے میں معاہدے پر پہنچنے کیلئے سٹیک ہولڈرز کی شمولیت زیادہ مناسب قدم ہے۔ اس کے علاوہ، رسک کمیو نیکیشن کی کوشش کی کامیابی کی پیمائش رِسک کمیونیکیشن کے مقاصدکو مدِّ نظر رکھ کر مختلف انداز سے کی جاسکتی ہے ۔

رسک کی موثر کمیونیکیشن PRA میں اس لیے اہم ہے تاکہ رسک کے جائزہ کار ، رسک کے منیجرز اور سٹیک ہولڈرزکی رسک کے بارے میں مشترکہ سمجھ بوجھ کو یقینی بنایا جائے اور بہترین انتظامی فیصلے کیے جاسکیں۔
شروع کرنے کے لئے اوپر دیےگئے موضوعات کے فہرست سے موضوع  ۴  کا انتخاب کریں یا پھر یہاں کلک کریں۔